اچھی عادات اور اچھے اخلاق

اچھی عادات اور اچھے اخلاق ہمیشہ اچھے خاندان کی نشاندہی کرتے ہیں

ایک مرتبہ ایک بادشاہ اپنے وزیر اور سپاہیوں کے ساتھ سیر وشکار کےلئے نکلا ، شکار کا پیچھا کرتے ہوئے وہ اپنے لشکر سے بچھڑ گیا ، راستے میں ایک جگہ پر ایک اندھا فقیر بیٹھا تھا اس فقیر کے پاس سے کوتوال گزرا تو اس نے کہا او بڈھے فقیر ! یہاں سے کوئی آدمی تو نہیں گزرا ۔ فقیر نے کہا کہ نہیں ۔

تھوڑی دیر بعد وہاں سے وزیر گزرا اور پوچھا کہ بابا یہاں سے کوئی آدمی تو نہیں گزرا پھر اس کے کچھ دیر بعد وہاں سے بادشاہ گزرا تو اس نے پوچھا باباجی یہاں سے کچھ آدمی تو نہیں گزرے ، بوڑھے فقیر نے کہا بادشاہ سلامت پہلے یہاں سے کوتوال گزرا ہے ، پھر یہاں سے وزیر گزرا ہے ، بادشاہ نابینا فقیر کی یہ بات سن کر حیران رہ گیا اور کہا کہ باباجی آپ تو نابینا ہیں، آپ کو کیسے پتہ چلا کہ ایک کوتوال ہے اور ایک وزیر ہے اور میں بادشاہ ہوں ۔

فقیر نے کہا ، بادشاہ سلامت الفاظ سے پتہ چلا اور میں نے بصیرت سے سمجھ لیا کہ یہ الفاظ کس کس کے ہیں ۔ کوتوال نے مجھے کہا او بڈھے ، وزیر نے مجھے کہا بابا اور آپ نے کہا بابا جی ۔ بادشاہ سلامت الفاظ آدمی کی اصلیت کا پتہ دیتے ہیں ، اچھی عادات اور اچھے اخلاق ہمیشہ اچھے خاندان کی نشاندہی کرتے ہیں۔

وہ لوگ جو کردار کی بلندیوں پر پہنچے

Leave a Reply