انتہا ئی قدیم لگژری بیت الخلا دریافت

اسرائیل میں ایک قدیم شاہی محل کی باقیات کی کھدائی کے دوران 2700 سال پرانا لگژری بیت الخلا دریافت ہوا ہے۔

اسرائیل کی اینٹیکس اتھارٹی (آئی اے اے) کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ دارالحکومت یروشلم میں ایک شاہی محل کی باقیات کی کھدائی کے دوران 7 ویں صدی قبل مسیح کا بیت الخلا دریافت ہوا ہے۔

آئی اے اے کے مطابق دریافت ہونے والا بیت الخلا یہودا (حضرت یعقوبؑ کے بیٹے) کے دور تک استعمال ہوتا رہا۔

اسرائیلی اتھارٹی کے مطابق پتھروں سے مہارت کے ساتھ تراشے ہوئے مستطیل شکل میں بنے بیت الخلا کے درمیان میں ایک سوراخ کے ساتھ بیٹھنے کی آرام دہ جگہ بھی بنائی گئی تھی جس کے ساتھ انسانی فضلے کے جمع ہونے کے لیے ایک گہرا ٹینک بھی موجود تھا۔

آئی اے اے کے ڈائریکٹر کا کہنا ہے کہ اس طرح کے بیت الخلا بہت ہی کم دریافت ہوئے ہیں کیونکہ ایسے بیت الخلا صرف امیر افراد ہی استعمال کیا کرتے تھے۔

Leave a Reply