کھیرے کا ایک ٹکڑا

کھیرے کا ایک ٹکڑا چھت سے چپک کر 6 ہزار 200 ڈالر کا ہوگیا

نیوزی لینڈ کی ایک آرٹ گیلری میں حال ہی میں ایک متنازع آرٹ ورک سامنے آیا ہے ۔ یہ آرٹ ورک اچار یا چٹنی میں موجود ایک کھیرے کا سلائس چھت پر چپکنے پر مشتمل تھا۔

برگر کی چٹنی چھت پر جاکر چپکنے سے آرٹ کا نمونہ بن گئی اور اس کی مالیت 6 ہزار دو سو ڈالر ہوگئی۔ اس آرٹ ورک کا عنوان پکل تھا۔

آکلینڈ میں واقع مائیکل لٹ گیلری میں ان دنوں جاری نمائش میں موجود ، اس فکر انگیز آرٹ ورک کا تعلق ایک آسٹریلین آرٹسٹ میتھیو گرفن سے ہے ۔

کہا جاتا ہے کہ یہ کھیرے کا ایک ٹکڑا ہے جو چیز برگر کے درمیان میں چٹنی اور کیچپ کے ساتھ موجود تھا اور اس کو نمائش کے دوران آرٹ گیلری کی چھت پر چپکا دیا گیا تھا۔

اس عجیب و غریب فنی نمونے کو گیلری انتظامیہ نے اپنے خاص انداز کے باعث متوجہ کرنے والا ڈیزائن قرار دیا اور اس کی مالیت کے بارے میں سوال کیا تھا۔

سڈنی کے فائن آرٹس کے ڈائریکٹر ریان مور کا کہنا ہے کہ اس قابل قدر تخلیق کی مالیت 6 ہزار 200 ڈالرز کے برابر ہے جو خاصی مناسب رقم ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ فنکار کسی چیز کے بارے میں خود فیصلہ نہیں کرتے بلکہ یہ کام آرٹ گیلریز کیا کرتی ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے پہلے بھی ایک ایسا ہی متنازع آرٹ ورک اس وقت خبروں کی شہ سرخی بنا تھا جب ایک دیوار میں ایک کیلا جا پھنسا تھا اور پھر وہ کیلا ایک لاکھ 20 ہزار ڈالر جیسی خطیر رقم میں فروخت ہوا تھا ۔

یہ بھی پڑھیں
ملکہ برطانیہ کی کچھ دلچسپ اور انوکھی باتیں

کھیرے کا ایک ٹکڑا چھت سے چپک کر 6 ہزار 200 ڈالر کا ہوگیا” ایک تبصرہ

Leave a Reply