سمندر کے آثار دریافت

مریخ پر تین ارب سال پرانے سمندر کے آثار دریافت

مریخ سیارے کے متعلق روزانہ نئی نئی تحقیقات سامنے آتی رہتی ہیں، حال ہی میں ماہرین کو ایک تحقیق میں سیارہ مریخ پر تین ارب سال پرانے بہت بڑے سمندر کے آثار ملے ہیں۔

امریکہ کی پینسلوانیا یونیورسٹی کے محققین نے چند تصاویر شیئر کیں ہیں اور ساتھ یہ بتایا ہے کہ کسی زمانے میں مریخ پر گہرا سمندر، نم اور گرم موسم بھی رہا ہو گا۔ ماہرین ککا کہنا ہے کہ یہ عرصہ ممکنہ طور پر ساڑھے تین ارب سال قدیم ہے۔

پروفیسر بینجمن کارڈینس کا کہنا ہے کہ اتنے بڑے سمندر کا مطلب ہے کہ یہاں زندگی کے امکانات بھی تھے۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ ہمیں یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ کسی زمانے میں مریخ گرم سیارہ ہوا کرتا تھا۔

تحقیق کاروں کو ساڑھے 6 ہزار کلو میٹر رقبے پر پھیلی ہوئی بہاؤ والی چوٹیاں ملی ہیں جو ممکنہ طور پر سمندر اور دریا کی وجہ سے وجود میں آ گئی تھیں ۔

امریکہ میں عجیب و غریب سمندری مخلوق دریافت

Leave a Reply