یاداشت بڑھانے کے

یاداشت بڑھانے کے انتہائی آسان طریقے

انسان کی عمر جیسے جیسے بڑھتی جاتی ہے اسکی یاداشت اسی حساب سے کمزور ہوتی جاتی ہے ۔ ہر انسان چاہتا ہے کہ اس کی یاداشت کافی عرصے تک برقرار رہے ۔ بعض لوگ زیادہ حساس ہوتے ہیں ، وہ چھوٹی چھوٹی باتوں کو لے کر اس پر کئی کئی دن سوچتے رہتے ہیں ۔ جس سے انسان کے ذہن پر کافی برا اثر رونما ہوتا ہے ۔ اس سے یاداشت کمزور ہونا شروع جاتی ہے ۔ اگر ہم مندرجہ ذیل طریقوں پر عمل کر لیں تو ہم اپنی یاداشت کو کافی عرصے تک برقرار رکھ سکتے ہیں ۔

دماغ مضبوط کرنے والی غذاؤں کا استعمال کریں ۔
ان غذاؤں میں وہ غذائیں سر فہرست ہیں ۔ جن میں اومیگا تھری فیٹس ، گلوکوز وغیرہ ملتے ہیں ۔ مزید برآں دن میں پانچ سے چھ مرتبہ کھانا کھائیے ۔ سارا دن وقفے وقفے سے تھوڑا تھوڑا کھانا کھانے سے خون میں گلوکوز کی سطح برقرار رہتی ہے اور دماغ بنیادی طور پر گلوکوز ہی سے توانائی حاصل کرتا ہے ۔

دماغ کو مصرف رکھنے کی کوشش کریں ۔
ایسی سرگرمیاں اپنائیں جن سے دماغ کی ورزش ہوتی رہے ۔ مثلاً معمے حل کریں ، کراس ورڈ پزل کھیل لیں ۔ان سرگرمیوں سے دماغ کی ورزش ہوتی ہے اور دماغ چاق و چوبند رہتا ہے ۔

جسم کو فٹ رکھیں :
روزانہ صبح سویرے یا شام کو تیز تیز چہل قدمی کریں اور بدن کو پھیلا کر کرنے والی ورزش کریں ۔ان ورزشوں کے ذریعے نہ صرف دماغ کا سفید مادہ بڑھتا ہے بلکہ مزید نیورون کنکشن بھی جنم لیتے ہیں ۔ورزش سے ذہنی اور جسمانی دباؤ کم کرنے میں مدد ملتی ہے ۔

فولاد کی سطح چیک کرتے رہیں :
ہمارے دماغ کے خصوصی خلیے نیوروٹرانسمیٹر ہماری یاداشت عمدہ حالت میں رکھتے ہیں اور یہ خود فولاد کے ذریعے توانا رہتے ہیں ۔ اس لیے اپنے بدن میں اس اہم معدن کی کمی نہ ہونے دیں ۔ جن مرد و زن میں فولاد کی کمی ہو، وہ عموماً بھلکڑ ہوتے ہیں ۔

ایک وقت میں ایک کام کریں ۔
کچھ لوگ ٹی وی پر خبریں سنتے ہوئے کھانا کھاتے ہیں اور کبھی کبھار تو اخبار بھی پڑھنے لگ جاتے ہیں ۔ جب ہم ایک وقت میں دو یا دو سے زیادہ کام کریں تو دماغ پروسیسنگ کا عمل ایسے علاقوں میں منتقل کردیتا ہے جو تفصیل سے بات کو محفوظ نہیں کرتے ۔ لیکن ایک وقت میں ایک کام کیاجائے تو دماغ اور اس کی جزئیات تک وہ کام محفوظ ہوجاتا ہے ۔

کولیسٹرول پر قابو پائیں :
انسانی جسم میں کولیسٹرول کی زیادتی بہت بڑا خطرناک عمل ہے ۔ اس کے ذریعے نہ صرف دل کی شریانوں میں چربی جم جاتی ہے ۔ بلکہ دماغ میں خون کی نسوں میں لوتھڑے جنم لیتے ہیں ۔ اس کی وجہ سے دماغ کو قیمتی غذائیت نہیں ملتی اور یاداشت کمزور ہونا شروع ہو جاتی ہے ۔ واضح رہے کہ دماغ میں تھوڑی سی چربی بھی نسیں بند کر ڈالتی ہے اس لیے اپنا کولیسٹرول ہمیشہ اعتدال پر رکھیں ۔

ادویات پر نظر رکھیں :
کئی ادویات انسانی یاداشت پر منفی اثرات ڈالتی ہیں ۔ ایک قابل ذکر بات یہ بھی ہے کہ انسان جتنا بوڑھا ہو، دوا اتنی ہی دیر تک اس کے بدن میں رہتی ہے ۔ نظام یاداشت پر اثر انداز ہونے والی ادویات میں اینٹی ڈیپریسنٹ ، بیٹا بلاکرز، کیمو تھراپی ، نیند آور، درد کش ، اینٹی ہسٹامائنز اور سٹاٹینس شامل ہوتی ہیں ۔

روزانہ ایک سیب کھائیں ۔
روزانہ ایک عدد سیب ضرور کھائیں ۔ اس سے دماغ صحت مند رہتا ہے اور یاداشت بھی کافی عرصے تک محفوظ رہتی ہے ۔

یہ بھی پڑھیں
ٹماٹر کے طبی فوائد

Leave a Reply