خبردار گیلے کپڑے

خبردار گیلے کپڑے سانس کی بیماری کا سبب بن سکتے ہیں

اکثر اوقات ایسا ہوتا ہے کہ خواتین کپڑے دھونے کے بعد انہیں کمروں یا صحن میں ہی خشک ہونے کے لئے ڈال دیتی ہیں۔ خواتین کو اس بات کا علم نہیں ہوتا کہ یہ ایک انتہائی خطرناک عمل ہے اور اس کی وجہ سے سانس کی مختلف بیماریاں ہو سکتی ہیں اور پھیپھڑوں کو بھی نقصان پہنچ سکتا ہے۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ کپڑوں سے نکلنے والی نمی اور ڈٹرجنٹ کی وجہ سے بخارات ہمارے پھیپھڑوں کے لئے انتہائی نقصان دہ ثابت ہوتے ہیں۔ڈاکٹروں کا یہ کہنا ہے کہ کپڑوں کی وجہ سے نمی کا تناسب 30 فی صد سے زیادہ ہوجاتا ہے اور کپڑوں کی نمی جو سانس کے لئے اچھی نہیں ہوتی ہمیں سانس لینے کی تکالیف میں مبتلا کردیتی ہے۔

کپڑوں میں جتنی زیادہ نمی ہوگی اتنا ہی فنگس ہونے کا امکان بڑھ جاتا ہے ۔کچھ کپڑوں میں تو 2 لیٹر سے بھی زائد پانی موجود ہوتا جس کی وجہ سے کمرے میں نمی تیزی سے بڑھنے لگتی ہے۔کچھ لوگوں کے لئے شاید یہ ایک سنگین مسئلہ نہ ہو لیکن جو لوگ پہلے ہی دمے یا کینسر کا شکار ہیں ان کے لیے اس سے کافی مشکلات پیدا ہوسکتی ہیں تاہم نارمل لوگوں کے لئے بہترین ہے کہ وہ اس معاملے میں احتیاط کریں۔

گھریلو ٹوٹکے (195)

Leave a Reply