ندیم بابرکو عمران خان کیساتھ جیل میں ڈالنا چاہیے،مریم اورنگزیب

ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب کہتی ہیں کہ ایل این جی میں 122ارب روپے کا ڈاکہ ڈالنے پر ندیم بابر کو ہٹا دیا، اب ندیم بابر کو عمران خان کے ساتھ جیل میں ڈالنا چاہیے۔

ماڈل ٹاون لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ 6ماہ میں مزید لوگ عہدے سے ہٹائےجائیں گے اور کہا جائے گا انکوائری ہو رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کمیشن رپورٹ پر شہبازشریف اور حمزہ سے ایک سوال نہیں پوچھا گیا۔ چینی کمیشن رپورٹ کو دفن کر دیا گیا ہے کیونکہ کمیشن کی رپورٹ میں لکھا ہوا ہے چینی چوری کس نے کی ہے۔ چینی انکوائری کمیشن رپورٹ پر عوام سے جھوٹ بولا جا رہا ہے۔

ترجمان ن لیگ نے کہا کہ آٹا چینی کمیشن انکوائری میں کہا گیا کہ جہانگیر ترین اور خسرو بختیار جیل جائیں گے لیکن اب ندیم بابر کو ہٹا ديا۔ چور چور کا شور کرتے ہوئے اربوں روپے کھا گئے، جلد انکوائری کے نام پر مزید لوگوں کو ہٹايا جائے گا اور نتیجہ کچھ نہیں نکلے گا۔

انہوں نے کہا کہ چینی کمیشن بنا تو چینی 72 روپے کلو تھی اور آج 120 تک پہنچ چکی ہے۔ شہباز شریف دور میں 52 روپے میں بکنے والی چینی 120 روپے کلو ہوگئی۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ کنٹینر پر چڑھ کر جھوٹ بولے گئے، قرض کمیشن کی رپورٹ آج تک نہیں آئی۔ سیاسی یتیم شہزاد اکبر کو سینیٹ کا ٹکٹ نہیں ملا اور آج خاموش ہے۔ 2014 سے اب تک حکمراں جھوٹ بول رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایک کروڑ نوکریاں اور 50 لاکھ گھر نہ دے سکے تو جھوٹ بولے۔ یہی وہ شخص تھا جو بجلی کے بل جلانے کا درس دیتا تھا اور یہی شخص کہتا تھا جب منہگائی ہو تو وزیر اعظم چور ہوتا ہے۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ جو کل ہوا وہ افسوس ناک ہے کیونکہ یہ جمہوری جدوجہد، پی ڈی ایم اتحاد اور چارٹرڈ کی نفی ہے۔ ایک پارٹی کے انفرادی فیصلے سے جدوجہد کو اجتماعی نقصان پہنچا اور جب حقائق کی بات نہیں ہوتی تو سوشل میڈیا کے لوگوں کو دکھ ہوتا ہے۔ قوم سوال اٹھا رہی ہے کہ باپ نے کس کے کہنے پر گیلانی کو ووٹ دیا؟

Leave a Reply