معروف شاعرہ وادیب کرن وقار کرونا میں مبتلا رہنے کے باعث انتقال کرگئیں۔

وہ پچھلے کئی دنوں سے لاہور کے ايک مقامی اسپتال میں زیرعلاج تھیں، شاعرہ کرن وقارکی عمر34برس تھی جبکہ ان کی ايک شیرخوار بیٹی بھی ہے۔

اس سے قبل شاعرہ کرن وقار کی والدہ اور بھائی بھی کرونا میں مبتلا رہنے کے باعث انتقال کرگئے تھے۔

دوسری جانب گلوکار جواد احمد کی جانب سے کی گئی سوشل میڈیا پوسٹ میں شاعرہ کو اسپتال میں ملنے والی ناکافی سہولتوں کا ذکر کیا گیا ہے۔

سوشل میڈ یا پر گلوکار جواد احمد کا کہنا تھا کہ کرن کی پوسٹ کے مطابق ان کی والدہ کرونا کی وجہ سے انتقال کر گئی ہیں،31مارچ کو کرن وقار نے ایک اور پوسٹ شیئر کی جس کے مطابق وہ اوران کا چھوٹا بھائی کرونا وائرس کی وجہ سے ڈی ایچ کیو اسپتال اوکاڑہ میں زیر علاج ہیں لیکن وہاں پر نہ آکسیجن تھی اور نہ ہی مکمل دیکھ بھال تھی

جواد احمد نے کہا کہ مجھے کوئی بتائے، کرونا کے علاج کے لئے کس اسپتال میں جانا بہتر ہے، پہلے ان کا بھائی فوت ہو گیا، اب آج کرن وقار خود بھی انتقال کر گئی ہیں۔

سوشل میڈیا پر جواد احمد نے کرن وقار کی طرف سے کی گئی چار پوسٹیں بھی شیئر کی ہیں جس میں اسپتال میں کرونا وائرس کے مریضوں کو ملنے والی ناکافی سہولتوں کا ذکر ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ گلوکار جواد احمد خود بھی کرونا وائرس کا شکار ہیں، تین روز قبل ان دوسری بار کرونا رپورٹ مثبت آئی۔

اداکار راشد محمود نے بھی کرن وقار کے انتقال پر دکھ کا اظہار کیا.

Leave a Reply