بھارتی سیاستدانوں کی ایلون

بھارتی سیاستدانوں کی ایلون مسک کو گھیرنے کی کوششیں

بھارتی سیاستدانوں کی ایلون مسک کو گھیرنے کی کوششیں

(ہم دوست نیوز): اطلاعات کے مطابق دنیا کے امیر ترین شخص، ٹیسلا کمپنی کے بانی اور مالک ایلون مسک کو بھارتی سیاستدانوں نے مکھن لگانا شروع کردیا ہے۔

تفصیلات کے ایلون مسک کے اس بیان کے بعد کہ حکومتی چیلنجوں کی وجہ سے ان کی الیکٹرک کار کمپنی کی مقامی لانچنگ میں تاخیر ہوئی ہے۔بھارتی سیاستدانوں نے ان کی توجہ حاصل کرنے کے لئے ٹوئٹر پر دوڑ شروع کر دی ہے۔تاکہ ٹیسلا کی فیکٹری ان کی ریاست میں کھل سکے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ٹیسلا کو دنیا کی سب سے بڑی مارکیٹوں میں سے ایک میں اپنی گاڑیاں فروخت کرنے کی امیدوں کو درآمدی ڈیوٹی سے جھٹکا لگا ہے۔ کیونکہ یہ ڈیوٹی 100 فیصد تک ہو سکتی ہے۔

خیال رہے کہ ریاست تلنگانہ سے تعلق رکھنے والے کے ٹی راما راؤ نے جمعے کو ایلون مسک کو جواب میں ٹویٹ کیاہے۔کہ “ہیلو ایلون! میں انڈیا کی ریاست تلنگانہ کا وزیر برائے آئی ٹی اور کامرس ہوں۔ہماری ریاست پائیداری کے اقدامات کے حوالے سے چمپیئن ہے اور ایک اعلیٰ درجے کی کاروباری منزل ہے۔”

ایک اقلیتی امور کے وزیر کا کہنا تھا کہ ان کی ریاست اپنے بہترین انفراسٹرکچر پر فخر کرتی ہے۔بمبئی کے وزیر ترقی نے اپنی ریاست کی ترقی پسند خصوصیات کو اجاگر کیا۔

تاہم ایلون مسک نے بھارتی وزیروں کی درخواستوں کا کوئی جواب نہیں دیا۔

واضح رہے کہ بھارت میں 40 ہزار ڈالر سے زیادہ کی درآمدی الیکٹرک گاڑی پر 100 فیصد ٹیکس عائد ہے۔ جس کی وجہ سے ٹیسلا کو خدشہ ہے کہ بھاری ڈیوٹی اسے بھارتی مارکیٹ سے باہر کر دے گی۔

Leave a Reply