یورپ میں کروناکے

یورپ میں کروناکےعلاج کیلیے فائزر ٹیبلٹ منظور

یورپ میں کروناکےعلاج کیلیے فائزر ٹیبلٹ منظور

(ہم دوست نیوز): اطلاعات کے مطابق یورپی یونین میں ادویات کے نگران ادارے نے کرونا وائرس کے علاج کے لیے فائزر کی گولی “پیکسلووِڈ” کی منظوری دے دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق جمعرات کو کرونا کے علاج کے لیے یورپ میں منظور ہونے والی یہ پہلی گولی ہے۔

تحقیقات کے مطابق پیکسلووِڈ گولی ایسے مریضوں کے لیے ہے جو کرونا سے شدید متاثر ہوسکتے ہیں۔یہ ہسپتال میں داخلے اور اموات میں کمی کا باعث بنی ہے۔اس کے علاوہ یہ گولی اومیکرون ویریئنٹ کے خلاف بھی مؤثر ہے۔

خیال رہے کہ پیکسلووِڈ گولی کی منظوری کو وبائی مرض کرونا کے خاتمے کے لیے ممکنہ طور پر ایک بہت بڑا قدم سمجھا جارہا ہے۔کیونکہ یہ ہسپتال کے بجائے گھر پر کھائی جا سکتی ہے۔

یورپی میڈیسنز ایجنسی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ پیکسلووڈ منہ کے ذریعے دی جانے والی پہلی اینٹی وائرل دوا ہے۔جس کی کرونا وائرس کے علاج کے لیے یورپی یونین میں استعمال کی سفارش کی جاتی ہے۔ ہم نے اومیکرون اور کرونا وائرس کی دیگر اقسام کے خلاف پیکسلووڈ کی افادیت کے ثبوت بھی دیکھے ہیں۔

ای ایم اے نے مزید کہاکہ اس نے پیکسلووڈ کو کرونا وائرس کے علاج کے لیے ان بالغوں میں استعمال کرنے کی سفارش کی ہے۔جن کو اضافی آکسیجن کی ضرورت نہیں اور جن کا بیماری سے شدید متاثر ہونے کا خطرہ ہے۔

Leave a Reply