درجنوں مکانات منہدم

بلوچستان: سیلاب کی تباہ کاریاں جاری، درجنوں مکانات منہدم

کوئٹہ :(ہم دوست نیوز)بلوچستان میں شدید طوفانی بارشوں اورسیلاب نے تباہی مچا رکھی ہے،جس کی وجہ سے صوبے کا ملک بھر سے زمینی رابطہ منقطع ہوکہ رہ گیا ہے۔

بلوچستان کے مختلف اضلاع میں سیلابی ریلوں اور موسلا دھار بارشوں میں رابطہ پل اور مرکزی شاہراہیں بہہ گئیں، نواں کلی، مستونگ، جھل مگسی، چمن اور ہرنائی سمیت بیشتر اضلاع تباہی کا شکار ہوگئے ہیں۔

بلوچستان میں سیلاب کی تباہ کاریاں ابھی بھی جاری ہیں، کوہلو میں شدید بارشوں سے کئی شہری اور دیہی علاقے شدید متاثر ہیں۔ ضلع میں طوفانی بارشوں سے 4 افراد جاں بحق اور درجنوں کچے مکانات منہدم ہوچکے ہیں۔

وزیر اعظم ایک بار پھر سیلاب متاثرہ علاقوں کی طرف روانہ

صوبے کے مختلف اضلاع کی طرح ضلع کوہلو میں بھی مون سون بارشیں ایسی جم کر برسیں کے اس کے نواحی و نشیبی علاقے زیر آب آگئے ہیں۔ بارشوں کے دوران متعدد واقعات میں 4 افراد جاں بحق اور 10 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

بارشوں سے کوہلو کے علاقے سنجاڑ ، تمبو، ،لاسے زئی اور ماوند میں سینکڑوں ایکڑ پر مشتمل ٹماٹر، کپاس اور مرچ کی کھڑی فصلیں سیلابی بارشوں میں بہہ گئی ہیں۔ کوہلو سبی قومی شاہراہ بھی مختلف مقامات پر شدید متاثر ہوئی ہے اور جہاں قومی شاہراہ کی بحالی متعلقہ اداروں کیلئے بڑا امتحان بن گیا ہے۔

2 تبصرے “بلوچستان: سیلاب کی تباہ کاریاں جاری، درجنوں مکانات منہدم

Leave a Reply