مظاہروں کی حمایت پر سابق ایرانی صدر کی صاحبزادی گرفتار

تہران(ہم دوست نیوز)پولیس حراست میں نوجوان لڑکی مہسا امینی کی ہلاکت کے خلاف ہونے والے مظاہروں کی حمایت کرنے پر سابق صدر ہاشمی رفسنجانی کی صاحبزادی گرفتار۔

تفصیلات کےمطابق ایران میں پولیس حراست میں22 سالہ مہسا امینی کی ہلاکت کےخلاف ملک بھر میں ہونےوالےمظاہروں کی حمایت پر سابق صدر ہاشمی رفسنجانی کی صاحبزادی کو گرفتار کرلیا گیا۔

غیرملکی میڈیا رپورٹس کےمطابق فائزہ رفسنجانی نےحکومت کی جانب سےمظاہروں کو ہنگامہ قرار دینےپر تنقید کی تھی جس پر انہیں گرفتار کیا گیا ہے۔

رپورٹس کےمطابق فائزہ رفسنجانی ایران میں خواتین کےحقوق سے متعلق سرگرم رہتی ہیں،حکومتی پالیسیوں پرتنقید کی وجہ سےانہیں پہلےبھی گرفتار کیا جاچکاہے۔
یہ بھی پڑھیں: ایران میں 10 روز سے پُرتشدد مظاہرے جاری ، 76 جاں بحق
یادرہےکہ ہاشمی رفسنجانی ایران کےچوتھے منتخب صدر تھے،وہ2 بار1989اور1993 میں صدر منتخب ہوئے۔

Leave a Reply