کمسن بچی کی قاتل ملازمہ کو سزائے موت دے دی گئی

ریاض (ہم دوست نیوز)سعودی بچی کے قتل میں ملوث گھریلو ملازمہ کی سزائے موت دے دی گئی۔

تفصیلات کےمطابق سعودی عرب میں بچی کے قتل میں ملوث گھریلو ملازمہ کو ریاض میں سزائے موت دے دی گئی۔عرب میڈیا رپورٹس کےمطابق4 برس قبل کمسن سعودی بچی نوال القرنی کےقتل کےواقعے نےپورے ملک ہلا کر رکھ دیا تھا۔گھریلو ملازمہ نے نوال القرنی کو سوتےمیں چھری کےوار کرکے ہلاک کردیا تھا۔

واقعہ کےبعد پولیس نے ایتھوپیا سےتعلق رکھنے والی گھریلو ملازمہ کو گرفتار کر کےعدالت میں پیش کیا تھا۔عدالت میں جرم ثابت ہونے پر اسے موت کی سزا سنائی گئی تھی جس پر گزشتہ عملدرآمد کیا گیا۔

رپورٹس کےمطابق نوال القرنی کی والدہ نے سزائےموت پر عمل درآمد کی خبر سن کر کہاکہ مجھے میرےصبر کا بدلہ مل گیا۔اپنی بیٹی نوال کو زندگی بھر یاد کرتی رہوں گی۔اس کاغم نہیں بھلا سکی۔
یہ بھی پڑھیں: اہلیہ سارہ کو کیوں قتل کیا ؟ملزم شاہنواز امیر نے وجہ بتا دی
نوال کی والدہ کا مزید کہنا تھاکہ انصاف کےلیے ایک ایک پل انتظار کر رہی تھی۔4 سال3 ماہ قبل میری بیٹی کو قتل کیاگیا تھا۔آج مجھےسکون ملا ہے۔

کمسن بچی کی قاتل ملازمہ کو سزائے موت دے دی گئی” ایک تبصرہ

Leave a Reply