من پسند قانون سازی

من پسند قانون سازی نہیں ہوسکتی، شیخ رشید

راولپنڈی: (ہم دوست نیوز) سابق وزیر داخلہ اور عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کی خودمختاری کو آئینی تحفظ حاصل ہے، اس لئے من پسند قانون سازی نہیں ہو سکتی۔

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک بیان میں کہا کہ نیب کی من پسند ترمیم بھی ختم ہو گی، پنجاب کا سیاسی کوڑا کرکٹ گٹر میں پھینکا جائے گا اور اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹ کا حق بھی حاصل ہو گا۔

پی ٹی آئی کا ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی کو فارغ کرنے کا فیصلہ

سابق وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ ماڈل ٹاؤن کے شہیدوں کو انصاف دیا جائے گا، ملکی اثاثے بیچنے سے پہلے ہی ان کا کھیل ختم کر دیا جائے گا، نہ تو من پسند قانون سازی ہوگی اور نہ ہی نواز شریف واپس آسکے گا۔

شیخ رشید کی طرف سے دعویٰ کیاگیا ہے کہ اکتوبر،نومبر میں جنرل الیکشن ہوں گے۔

عدالت عظمیٰ کے اختیارات سے متعلق وزرا کے مختلف بیانات پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کی خود مختاری کو آئینی تحفظ حاصل ہے، اس کے اختیارات کو بڑھایا جا سکتا ہے لیکن کم نہیں کیا جا سکتا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کو ہاتھ کی چھڑی ،جیب کی گھڑی نہیں بنایا جاسکتا اور نہ ہی گورنر راج لگایا جا سکتا ہے، ڈالر 250 کا ہو گیا ہے اور 7 ارب ڈالر کے ذخائر کم ہو چکے ہیں۔

2 تبصرے “من پسند قانون سازی نہیں ہوسکتی، شیخ رشید

Leave a Reply