انجلینا جولی نے پاکستانی

انجلینا جولی نے پاکستانی بچے کو گود نہ لینے کی وجہ بتادی

(ہم دوست نیوز) : اقوام متحدہ کی خصوصی سفیر اور مشہور بالی ووڈ اداکارہ انجلینا جولی اس وقت سیلاب متاثرین سے ملنے اور ان کی مدد کرنے کیلئے پاکستان آئی ہوئی ہیں ۔ انجلینا 20 ستمبر کو آئی تھیں اور 3 دن قیام کریں گی اور اس دوران وہ اندرون سندھ کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کا دورہ بھی کریں گی۔

اس سے پہلے بھی انجلینا 2 مرتبہ پاکستان آچکی ہیں۔ 2010ء کے دورے کے دوران ایک صحافی نے انجلینا جولی سے کسی پاکستانی بچے کو گود نہ لینے سے متعلق سوال کیا تھا تو انجلینا نے کہا کہ “میں مذہبی حساسیت کے باعث کسی پاکستانی بچے گو گود نہیں لے سکتی کیونکہ اسلامی ممالک میں بچوں کو گود لینے کے قوانین دوسرے ممالک سے مختلف ہیں اور میں ان کا بے حد احترام کرتی ہوں، لیکن بچوں کی کفالت کرنے کے اور بھی بہت سے طریقے ہوتے ہیں۔”

انجلینا جولی نے پاکستانی عوام کے دل جیت لئے

خیال رہے کہ انجلینا جولی اور ان کے سابق شوہر بریڈ پٹ کے 3 بچے ہیں جبکہ 3 بچے انہوں نے ویتنام، ایتھوپیا اور کمبوڈیا سے گود لیے ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ اسلام میں بچے کو گود لینے والا شخص بچے کیلئے حقیقی والد یا والدہ کی جگہ نہیں ہوگا اور نہ ہی وہ بچے کا خاندانی نام تبدیل کرسکتا ہے، اور ان قوانین کا بنیادی مقصد بچے کے اصل مسلم نسب کو برقرار رکھنا ہے۔

Leave a Reply