نوجوانوں پر تمباکو نوشی

نیوزی لینڈ: نوجوانوں پر تمباکو نوشی کی تاحیات پابندی کی تیاری

(ہم دوست نیوز): نیوزی لینڈ نوجوانوں پر تمباکو نوشی کی تاحیات پابندی کی تیاری۔

اطلاعات کے مطابق نیوزی لینڈ کی حکومت نے نوجوانوں کو تمباکو نوشی سے تاحیات باز رکھنے کے لیے قانون سازی کا فیصلہ کرلیا ہے۔

بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق نیوزی لینڈ میں نئی نسل کو تاحیات تمباکو خریدنے سے روکنے کے لیے قانون سازی اگلے سال کی جائے گی۔ اس قانون کے مطابق 2008 کے بعد پیدا ہونے والے نوجوان تاحیات تمباکو اور سگریٹ نوشی نہیں خرید سکیں گے۔

یہ اقدام وزیر صحت کی تمباکو نوشی کے خلاف کریک ڈاؤن کا حصہ ہے۔اس حوالے سے وزیر صحت کا کہنا تھا کہ ہم اس بات کو یقینی بنانا چاہتے ہیں کہ ہمارے نوجوان کبھی بھی تمباکو نوشی نہ کریں۔

خیال رہے کہ ملک بھر کے ڈاکٹرز اور ماہرینِ صحت کی جانب سے نوجوانوں کو تمباکو نوشی سے باز رکھنے کے لیے قانون لانے کے اس فیصلے کا خیر مقدم کیا گیا ہے۔

تاہم کچھ ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ حکومت کے اس اقدام سے ملک میں تمباکو کی بلیک مارکیٹنگ بھی عمل میں آسکتی ہے۔ اس کے لیے کسٹم حکام کو سرحدوں پر کنٹرول مزید سخت کرنا ہوں گے۔

Leave a Reply