ملک میں بارشوں میں کمی کی وجہ خواتین کا حجاب نہ پہننا ہے، ایرانی عالم

تہران:( ہم دوست ویب) ایرانی عالم محمد مہدی حسینی ہمدانی نے کہا ہے کہ ریاستی ادارے حجاب نہ پہننے والی خواتین سے سختی سے نمٹیں کیونکہ اس وقت ملک میں خشک سالی کا سامنا اس وجہ سے ہے کیوں کہ خواتین گلی محلوں میں ننگے سر گھوم رہی ہیں۔

عرب نشریاتی ادارے کی خبر کے مطابق ایرانی عالم نے یہ بات جمعے کے خطبے میں کہی، عالم محمد مہدی حسینی نے ریاستی اداروں سے حجاب نہ پہننے والی خواتین کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ بھی کیا ہے ۔

جمعہ کے خطبہ میں عالم محمد مہدی حسینی ہمدانی نے یہ بھی کہا کہ شریعت اور ملکی قانون کے مطابق خواتین کو اپنا سر ڈھانپنا چاہیے لیکن گلی محلوں اور شاپنگ مالز میں خواتین ننگے سر گھوم رہی ہیں۔ ایک اسلامی ریاست میں اس چیز کا تصور نہیں کیا جا سکتا۔

ایرانی عالم نے کہا کہ بارشوں میں کمی اور خشک سالی کی ایک وجہ خواتین کا بے حجاب ہو کر پھرنا ہے جس کے رجحان میں مھسا امینی ہلاکت پر ہونے والے مظاہروں کے بعد سے ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: مہسا امینی کی ہلاکت پر ایران میں ملک گیر مظاہرے

خیال رہے 22 سالہ لڑکی مہسا امینی کو ستمبر 2022 میں ایران کی پولیس نے حجاب درست طریقے سے نہ پہننے پر گرفتار کیا تھا اور دوران حراست لڑکی کی مبینہ طور پر تشدد کے باعث موت واقع ہوگئی تھی۔

Leave a Reply